The Blanket /کمبل

blanket ستمبر کی خوشگوار رات تھی وادی میں چاند آسمان پر پورے آب وتاب سے چمک رہاتھا لیکن گیا رہ سالہ پیٹر(Peter) نہ ہی چاند کی طرف متوجہ تھااور نہ ہی باورچی خانے میں ستمبر کی سرد ہوا کو محسوس کررہا تھا کیونکہ اس کی تمام ترتوجہ باورچی خانے میں میز پر پڑے ہوئے سرخ اور سیاہ رنگ کے کمبل پر تھی یہ کمبل ابو نے دادا کو تحفے  میں دیا  تھا۔۔۔ ایک جانے والا تحفہ۔ ان کا کہنا تھا کہ چونکہ دادا  گھر سے جارہے ہیں اس لئے انہوں نے کمبل کو جانے والے کا نام دیا تھا مگر پیٹر کو ابھی تک یقین نہیں آرہا تھا کہ ابو دادا کواس کمبل کے ساتھ جانے کا کہیں گے جسے اس نے آج ہی خریدا تھا اور یوں پیٹر کی اپنے دادا کے ساتھ یہ آخری شام تھی

دادا اور پوتے نے اکٹھے رات کا کھانا کھایا کھانے کے برتن دھوئے ابو اس عورت کے ساتھ باہر جاچکے تھے جس سے اس نے شادی کرنا تھی اورکچھ ہی دیر میں واپس لوٹنا تھا جب تمام برتن دھل چکے تو دادا اپنے پوتے کے ساتھ باہر آیا اور دنوں چاند کی روشنی میں بیٹھ گئے۔

Continue reading

Share Button

The Gift Of The Magi / تحفہ

gold watchchainاس کے پاس کُل ایک ڈالر اور ستاسی سینٹ(1.87$) تھےاور  اُن  میں  ساٹھ  سینٹ  ( 60cents) صرف  ایک اور دو پیسوں میں تھے جسے بمشکل  سبزی، گوشت اور دوسری چیزوںمیں سے بچا   پائ تھی۔ اس نے رقم کو تین بار گنا لیکن ہر  مرتبہ ایک ڈالر اور ستاسی سینٹ        (1.87$) ہی تھی  وہ پریشا ن تھی کیونکہ کل کرسمس                    (Christmas)  تھی۔

وہ کچھ بھی نہیں کرسکتی تھی سوائے اس کے کہ وہ صوفہ (Couch) پر جاکر لیٹ جاۓ اور خوب روئے لہٰذا ڈیلا (Della) نے ایسا ہی کیا بظاہر اس آراستہ فلیٹ کا کرایہ آٹھ ڈالر فی ہفتہ تھا نیچے کوریڈور  (Corridor) میں ایک چھوٹا سالیٹر بکس تھاجس میں خط بھی نہیں ڈالا جا سکتا تھا ایک بجلی کی گھنٹی تھی جو ناکارہ تھی دروازے کے ساتھ ہی ایک چھوٹی سی تختی تھی جس پر جناب جیمزڈ یلینگم ینگ (Mr. James Dillingham Young) لکھا ہوا تھا۔

جب تختی لگائی گئی تو جناب جیمزڈیلینگم ینگ ہفتہ میں 30ڈالر کماتے تھے کیونکہ ان دنوں اس کے مالک کا کاروبار بہت اچھا تھا لیکن جب آمدنی کم ہوتی گئی تو اسے ہفتہ میں محض 20ڈالر ملنے لگے لیکن تب بھی اس کا نام بہت لمبا اور اہم معلوم ہوتا تھا مگر اسے جیمزڈی ینگ           (James.D.young) ہونا چاہئے تھا کیونکہ ان حالات میں جب جناب جیمزڈیلینگم ینگ آراستہ کمرے میں داخل ہوتا تو اس کانام واقعی بہت چھوٹا معلوم ہوتا تھا لیکن ہمیشہ کی طرح اس کی بیگم ڈیلا اپنے خاوند جیمزڈلینگم ینگ کا استقبال گرم جوشی سے کرتی اور اسے جم (Jim) کہہ کر خوش آمدید کہتی ۔

Continue reading

Share Button

A Letter to God/خدا کے نام خط

letters_to_godوادی میں پہاڑی کی چوٹی پر تنہا گھر جہاں سے دریا مویشیوں کے باڑے کے ساتھ مکئی کی پکی ہوئی فصل جو ہمیشہ اچھی ہوتی تھی دلکش منظر پیش کررہا تھا ”  زمین کو ہلکی سی بونداباندی کی ضرورت ہے“۔لینکو(Lencho) کسان شمالی مشرق کی طرف سے آنے والے بادلوں کو غور سے دیکھتے ہوئے سوچتا ہے۔

”اس بار بارش ضرور ہوگی، بیگم“

”ہاں اگر اللہ نے چاہا“اس کی بیوی جو کھانے کی تیاری میں مصروف تھی جواب دیتی ہے۔

بڑے لڑکے کھیت میں مصروف تھے جبکہ چھوٹے گھر کے قریب کھیل رہے تھے اسی اثناء میں ماں کھانے کے لئے آواز دیتی ہے۔پوری فیملی کھانے میں مصروف تھی کہ بارش کے قطرے گرنا شروع ہوجاتے ہیں جس کی پیش گوئی کسان نے پہلے کردی تھی۔شمالی مشرق کی جانب سے مزید گہرے بادل آرہے تھے ہوا میں خنکی اور نمی بھی بڑھ رہی تھی کسان بارش سے لطف اندوز ہونے کے لئے مویشیوں کے باڑے کی طرف جاتا ہے اور واپسی پر آکر کہتا ہے کہ ”آسمان سے بارش نہیں بلکہ نئے سکے  (Coins) برس رہے ہیں بڑے بڑے قطرے دس سینٹ (Cent) جبکہ چھوٹے پانچ سینٹ (Cent) ……” 

Continue reading

Share Button

The Terror

Click on the story to get larger image

Click on the story to get larger image

Share Button