Adam-e Khub/ آدمِ خوب


خود خو از دیگا بہتر یا خوب تر فکر کدو یک زہنیت استہ کہ خوب خوب آدما رہ چمای شی کور کدہ و دماغ (فکر) شی لنگ کدہ۔ ما خوب استوم یک مرض استہ کہ صحت مند نفرا رہ ناجور کدہ۔ کسائیکہ دہ ای مرض مبتلا استہ اونا ہمیشہ دہ یک فکر استہ کہ اونا بسیار آدمِ آگاہ، اوشیار ، خانندہ و خوش اخلاق استہ۔ اونا باور درہ کہ اونا ہر چیز رہ موفامہ۔ از ہر چیز خبر دره. ہر سوال رہ جواب شی خبر درہ۔ اونا دہ یک فکر استہ کہ بجوز خودگون شی دیگا تمام احمق، بے عقل، بے ہنر، بدنمنہ و بد اخلاق استہ۔ برای ازی کہ خود خو رہ خوب بوگیہ اونا دیگا رہ بد موگیہ۔ اونا ہمیشہ خواہش درہ کہ ہر آدم گپ ازونا رہ گوش کنہ و اونا رہ تعریف کنہ کسائیکہ تعریف مونہ اونا رہ خوب و کسائیکہ نمونہ اونا رہ بد موگیہ۔ ای رقم آدما ہمیشہ خود خو یک کلان شخصیت فکر مونہ۔ ہمیشہ دہ حالتِ پرٹوکول استہ۔ از ہر کس خواہش درہ کہ اونا رہ عزت کنہ۔ بظاہر خوش اخلاق معلوم موشنہ مگہ نفرت ، تعصب و خود پسندی دہ مینے خون ازینا غرق استہ۔
مثلن، آدمای مذہبی ہمیشہ خودگون خو رہ خوب انسان فکر مونہ۔ اونا یقین درہ کہ اونا از تمام بہتر انسان استہ۔ اونا مذہب رہ خوش درہ مگہ فقط مذہب از خود خو۔ فرقہ رہ دوست درہ مگہ فقط فرقے از خود خو۔ نماز رہ خوش درہ مگہ فقط طریقے نماز از خود خو۔ برای ازی کہ مذہب یا فرقے از خود خو خوب بوگیہ اونا دیگا مذاہب یا فرقہ ہا رہ بد موگیہ۔ اگہ از بد گفتو ام دل شی قرار نگرفت توہین مونہ۔ اگہ از توہین ام دل شی قرار نگرفت اونا رہ کافر موگیہ۔ اگہ از کافر گفتو ام دل شی قرار نگرفت اونا رہ موکشہ۔ اگہ از کشتو ام دل شی قرار نگرفت قد خود خو قاتی قاتی اونا رہ ام ‘شہید’ مونہ۔ Continue reading